پاکستانیوں کے اے ٹی ایم کارڈز بیرونِ ممالک ہیک ہونے کا انکشاف

پاکستانیوں کے اے ٹی ایم کارڈز بیرونِ ممالک ہیک ہونے کا انکشاف


 ویب ڈیسک(24نیوز): چینی باشندوں کی جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے پاکستانیوں سے ہیرا پھیری ، چین میں بیٹھ کر 579 پاکستانی بینک اکاؤنٹس سے 1 کروڑ روپے کی رقم لےاڑے۔نشانہ بنانے والے کوئی اور نہیں پڑوسی ملک چین کے باشندے ہیں۔

تیزی سے ترقی کرتی دنیا نے چوروں کو بھی نت نئی ٹیکنالوجیز سے آراستہ کردیا ہے، اب ہیکرز اے ٹی ایم مشین سے کارڈ کا ڈیٹا چوری کرکے کہیں سے بھی باآسانی رقم نکال لیتے ہیں اور یہ کاریگری اے ٹی ایم اسکمنگ کہلاتی ہے جس کا شکار اب پاکستانی بھی ہوچکے ہیں اور نشانہ بنانے والے کوئی اور نہیں پڑوسی ملک چین کے باشندے ہیں۔

اسکمنگ ڈیوائس بظاہر عام اے ٹی ایم مشین میں کارڈ داخل کرنے کی جگہ سے مشابہت رکھتی ہے اور اسے عین کارڈ داخل کرنے کی جگہ پر لگا دیا جاتا ہے جو مشین میں داخل ہونے والے ہر اے ٹی ایم کارڈ کا تمام ڈیٹا اسکین کرلیتی ہے، دوسری جانب پن کوڈ داخل کرنے والے کی پیڈ کے اوپر خفیہ کیمرہ لگایا جاتا ہے یا ہو بہو کی پیڈ مشین کے کی پیڈ پر فٹ کردیا جاتا ہے جو داخل کیئے جانے والے ہر پن کوڈ کو ریکارڈ کرنے کا کام انجام دیتا ہے۔

 ہیکرز مخصوص وقت کے بعد اسکمنگ ڈیوائس اور خفیہ کیمرہ یا ڈمی کی پیڈ نکال کر ڈی کوڈ کرکے تمام اے ٹی ایم کارڈز کی تفصیلات حاصل کرتے ہیں اور پھر کہیں سے بھی باآسانی رقم نکالی جاتی ہے، جیسا کہ پاکستانیوں کے ساتھ ہوا اور اب تک 579 بینک اکاؤنٹس سے 1 کروڑ روپے تک کی رقم چین سے نکالی جاچکی ہے۔