سانحہ ماڈل ٹاؤن:شہید خاتون کی بیٹی منظرعام پر آگئی،اہم درخواستیں کردیں

سانحہ ماڈل ٹاؤن:شہید خاتون کی بیٹی منظرعام پر آگئی،اہم درخواستیں کردیں


لاہور(24نیوز) پہلی بار سانحہ ماڈل ٹائون شہید خاتون کی بیٹی منظرعام پر آگئی،24 نیوز کے لائیو شو میں معصوم بچی نے حکومت سےاہم درخواست کر دی.

 

تفصیلات کے مطابق 24نیوز کے پروگرام پوائنٹ آف ویو ود ڈاکٹر دانش میں سانحہ ماڈل ٹاؤن میں شہید ہونے والی خواتین کی بیٹی پہلی بار منظر عام پر آگئی,پروگرام میں اینکر پرسن نے شہید خاتون   کی بیٹی سے سوالات کیئے کہ کیا اپ کو آپکی امی کی یاد آتی ہے کیا بیٹا؟ جب سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ آئی تو کیا آپ کو اپنی پھوپھو کی یاد آئی؟  آپ کا حکومت سے کیا مطالبہ ہے؟اللہ تعالیٰ سے کیا ہے؟ پاکستان کی عوام سے کیا ہے؟افواجِ پاکستان سے کیا ہے؟ اور عدالت عظمٰی سے کیا مطالبہ ہے؟

جس پر شہید خواتین کی بیٹی بسمہ امجد کا کہنا تھا کہ 17 جون کے واقع کو آج ساڈھے تین سال گزر گئے، کوئی ایسا دن نہیں گزرا کہ جس دن امی جی کی یاد نہ آئی ہو، پھوپھو کی یاد نہ آئی ہو، کوئی ایسا دن نہیں گزرا جس دن ماما کو یاد کیئے بغیر نہ سوئی ہوں،لیکن حوصلہ آتا ہے ہمت آتی ہے اور فخر محسوس ہوتا ہے کہ میری امی اور پھوپھو اچھی شہادت کے رتبے پر فائض ہویئں ہیں۔

ٹی وی پر بار بار سانحہ ماڈل ٹاؤن دیکھ کر وہ زخم پھر سے تازہ ہوتےہے،وہ زخم پکارتا ہے کہ کب انصاف ملے گا۔

میری اعلیٰ عدلیہ،عدالت عظمیٰ اور افواج پاکستان سے درخواست ہے کہ آپ جانتے ہیں کہ انکوائری رپورٹ میں سب واضح بتا دیا گیا کہ قصور وار کون ہیں، نہیں تو قیامت والے دن اگر ہمیں دنیا میں انصاف نہ ملا تو انصاف کٹھگڑے میں لا کر ان سے پوچھوں گی کہ آپ ہمیں انصاف نہیں دلا سکتے تھے۔

یہ جتنے بھی ہتھکنڈے استعمال کرتے ہیں ہمارے حوصلے اتنے ہی بلند ہوتے جاتے ہیں،انشاءاللہ ہم انصاف لے کر دم لیں گے، ہم غیرتِ ایمانی کے جزبے سے سر شار ہیں،ہمارے آگے پیسے دولت کوئی معنی نہیں رکھتی، ہم صرف سانحہ ماڈل میں شہید ن ہونے والوں  کاقصاص چاہتے ہیں۔